• Wednesday, 20 October 2021
ملک کےکن علاقوں میں برفباری جاری

ملک کےکن علاقوں میں برفباری جاری

پشاور(نیا ٹائم ) ملک کے بلائی علاقوں میں وقفے وقفے سے بارش کا سلسلہ جاری ہے جبکہ پہاڑوں پر برفباری ہورہی  ہے جس کی وجہ سے سردی کا آغاز ہوگیا ہے ملک  کےمختلف شہروں  مانسہرہ، بٹگرام اور  دیگرسیاحتی مقامات وادی ناران کے پہاڑوں سمیت جھیل لولوسر، جھیل سیف الملوک اور بابو سر ٹاپ پر برفباری دوسرے روز بھی وقفے وقفے سے  جاری ہے جس  کےباعث سردی  کی شدت میں اضافہ ہوگیا ہے ،اب تک ناران کے پہاڑوں پر 2انچ سے زائد برف پڑ چکی ہے تاہم  شدید برفباری  کی وجہ سے  ناران بابو سر ٹاپ روڈ عارضی طور  ٹریفک  کے لئے بند کردی گئی  ہے ٹریفک پولیس کی جانب  سے ناران، چلاس اور گلگت بلتستان جانے والی مسافر گاڑیوں کو شاہراہ قراقرم پر سفر کرنے کی اجازت دی گئی ہے ، ادھر  آزاد کشمیر کی وادی نیلم میں  گزشتہ 2 روز سےبارش کا سلسلہ  جاری  ہے  جبکہ  بلند پہاڑی علاقوں  میں بھی برفباری جاری ہے جبکہ ارنگ کیل، شونٹھر، گریس اور سرگن کی آبادیوں میں بھی ہلکی برفباری ہورہی ہے تاہم بعض علاقوں  رتی گلی، چٹا کٹھا، پتلیاں، بابون اور بلند مقامات برفباری  کے باعث شاہراہیں  سیاحوں کے لئے بند کردی گئی  ہے،دوسری جانب پنجا ب  میں سموگ  نے ڈیرے  جمالیے ہیں   ، سموگ سے بچاؤ کیلئے پنجاب حکومت نے فضائی آلودگی پھیلانے والوں کےخلاف  سخت کارروائی کا فیصلہ  کیا ہے اس حوالے سے  چيف سيکرٹری پنجاب کی زيرصدارت اجلاس ہوا جس  میں فیصلہ  کیا گیا کہ فصلوں کی باقیات، کوڑا کرکٹ جلانے، فضائی آلودگی کا سبب بننے والی صنعتوں اور گاڑیوں کے خلاف سختی سے کارروائی عمل میں لائی جائےگی ، چیف سیکرٹری  نے ہدایت کی کہ  صوبے  میں دفعہ 144 پر سختی سے عمل درآمد  کرایا جائے ،تاہم فصلوں کی باقیات ،کوڑاکرکٹ جلانے پر 6 اکتوبرسے 1ماہ کیلئے پابندی  کی گئی تھی، چیف سیکرٹری  پنجاب نے مزید کہاکہ  متعلقہ محکمے سموگ سے بچاؤ کی  گائیڈ لائنز پر عمل درآمد یقینی بنائیں اور اس حوالے  کوئی کوتاہی  برداشت نہیں کی جائے گی ۔انہوں نے کہاکہ  فيکٹريز ميں غیرمعیاری ایندھن کے استعمال پرپابندی پرعمل در آمد یقینی بنایاجائے اور شہری اسموگ کی روک تھام کیلئےحکومت کی کوششوں کا ساتھ دیں۔

 

کلین گرین پاکستان مہم میں کتنے ملین ڈالرز خرچ ؟