• Wednesday, 20 October 2021
مس ہالینڈ نے تاج کی قربانی کیوں دی؟ ‎

مس ہالینڈ نے تاج کی قربانی کیوں دی؟ ‎

 

ہالینڈ(نیا ٹائم ویب ڈیسک) کورونا وائرس نے جہاں دنیا کے ہر شعبےکومتاثرکیا ہے وہیں کئی افراد کے خوابوں کو بھی آڑے ہاتھوں لیا ہے، اس بار عالمی وباء کورونا وائرس نے مس ہالینڈ کا مس ورلڈ بننے کا خواب ہی چھین لیا۔ کورونا ویکسین نہ لگوانے پرمس ہالینڈ ڈیلے ولیمسٹین کوانٹرنیشنل مقابلہ حسن میں شرکت سےروک دیاگیا، عالمی مقابلہ حسن کے منتظمین کے مطابق مقابلے میں حصہ لینے کے لیے بنیادی شرائط میں سے ایک لازمی شرط کورونا ویکسین لگوانا ہے۔ تمام ممالک نے اپنے شہریوں کی حفاظت کے لیے دوسرے ممالک سے آنے والے شہریوں کے لیے کورونا ویکسین لازی قرار دے رکھی ہے، لیکن مس ہالینڈ ویکسین لگوانے پر آمادہ نہیں ہیں، اس لیے انہوں نےعالمی تاج کو ہی ٹھوکرماردی۔ ڈیلے ولیمسٹین کوانٹر نیشنل مقابلہ حسن کےلیے پورٹو ریکوکا سفرکرنا تھا، جہاں مس ورلڈ ٹائٹل کےلیے فائنل مقابلہ منعقد ہوگا۔مس ورلڈ کے تاج کی قربانی دیتے ہوئے 21 سالہ حسینہ کا یہ کہنا تھا کہ یہ ٹائٹل حاصل کرنا ان کا خواب تھا جسے حاصل کرنے کے لیے انہوں نے بہت محنت کی لیکن وہ ویکسین لگوانے کے لیے آمادہ نہیں ہیں اوروہ نہیں جانتی کہ وہ کبھی ویکسین لگوا بھی سکیں گی یا نہیں۔تاہم ان کا کہنا تھا کہ انہیں اپنے اس فیصلے پر پچھتاوا نہیں ہے،انہوں نے بہت سوچ سمجھ کر اپنا فیصلہ لیا ہے۔رپورٹ کے مطابق ولیمسٹین کی جگہ مس ہالینڈ کی رنراپ لیزی ڈوب مقابلہ حسن میں حصہ لیں گی ، جو دسمبرمیں منعقد ہورہاہے۔