• Wednesday, 20 October 2021
محافظ اغوا کار بن گئے

محافظ اغوا کار بن گئے

فیصل آباد ( نیا ٹائم ) شادی کا جھانسہ دے کر تاجر کو اغوا کر لیا گیا ، تاوان کی وصولی کے بعد رہائی ملی ۔ واقعہ فیصل آباد میں پیش آیا جہاں تاجر کو شادی کا جھانسہ دے کر بلوایا گیا اور 3 پولیس اہلکاروں سمیت 6 ملزموں نے تاجر کو اغوا کر کے حبس بے جا میں رکھ کے ایک لاکھ 90 ہزار روپے کا تاوان وصول کر کے رہا کیا ۔ پولیس ذرائع کے مطابق تاجر امین کو ڈھڈی والا کی رہائشی خاتون نے شادی کروانے کا جھانسہ دے کر بلوایا اور تین پولیس اہلکار ساتھیوں کے ساتھ مل کر اسے اغوا کر لیا اور نامعلوم جگہ پر قید کر کے اس کے دوست سے اڑھائی لاکھ روپے تاوان کی رقم کا مطالبہ کیا ۔ ملزموں نے مغوی کے پراپرٹی ڈیلر کے ذریعے ایک لاکھ 90 ہزار روپے وصول کرنے کے بعد مغوی کو رہا کر دیا ۔ مغوی کی رہائی کے بعد واقعہ منظر عام پر آنے کے بعد پولیس نے خاتون اور واقعہ میں ملوث تینوں پولیس اہلکاروں سمیت 6 افراد کے خلاف تھانہ مدینہ ٹاؤن میں مقدمہ درج کر لیا ۔ اغوا کار پولیس ملازمین میں سے ایک اسد پنجاب کانسٹیبلری ، دوسرا رشید سی آئی اے اور ایک اہلکار آصف تھانہ روڈالہ میں تعینات ہے ۔ پولیس نے تینوں پولیس ملازمین کو گرفتار کر کے کارروائی کا آغاز کر دیا ہے ۔ واضح رہے اس سے قبل رواں برس اگست میں کراچی کے ایک تاجر کو بھی اغوا کیا گیا تھا اور اس کی رہائی کے بدلے 20 لاکھ روپے تاوان کا مطالبہ کیا تھا اور تاجر کو تاوان کے عوض رہائی ملی تھی اس واقعہ میں بھی دو پولیس اہلکاروں سمیت 5 ملزمان ملوث تھے ۔