خود کش بمبار کے لواحقین کی مالی امداد

خود کش بمبار کے لواحقین کی مالی امداد

کابل ( نیا ٹائم ویب ڈیسک ) طالبان نے امارت اسلامیہ میں خود کش بمبار کے لواحقین کو مالی امداد دینے کے لیے تقریب کا انعقاد کیا ۔ افغان وزیر داخلہ سراج الدین حقانی نے خود کش بمبار کے لواحقین کو مالی امداد کے ساتھ ساتھ ہر خاندان کو ایک ایک گھر بھی دینے کا اعلان کیا ۔ خبر رساں ادارے کے مطابق تقریب کابل کے مقامی ہوٹل میں منقد ہوئی جس  میں امارت اسلامیہ افغانستان کے ذمہ داران شامل ہوئے ۔ افغان جنگ میں شہید ہونے والے جنگجوؤں کے لواحقین میں مالی امداد تقسیم کی گئی اور ہر شہید کے اہلخانہ کو ایک گھر بھی دینے کا اعلان کیا گیا ۔ وزیر داخلہ سراج الدین حقانی نے کہا کہ افغان جنگ کے شہداء اسلام اور ملک کے ہیرو ہیں ۔ انہوں نے جانوں کی قربانی دے کر ملک میں اسلامی حکومت کے قیام کی راہ ہموار کی ۔ انہوں نے شہداء کے لواحقین میں 10 ہزار افغان روپے مالی امداد اور ایک ایک جوڑا لباس بھی تقسیم کیا ۔ جبکہ شہداء کے لواحقین کے لیے ایک ایک پلاٹ دینے کا بھی وعدہ کیا ۔ وزارت داخلہ کے ترجمان سعید خوستی نے بھی سوشل میڈیا کی ویب سائٹ پر اپنی ٹویٹ میں ایک تصویر شیئر کی جس میں وزیر داخلہ سراج الدین حقانی کو لواحقین کو گلے لگاتے دکھایا گیا ہے ۔ سعید خوستی نے ٹویٹ میں لکھا کہ وزیر داخلہ نے شہداء اور فدائین کے اہلخانہ سے ملاقات کی ۔ وزارت داخلے کے ترجمان کی طرف سے شیئر کی گئی تصاویر میں سراج الدین حقانی کے چہرے کو دھندلا کیا گیا تھا ۔ چونکہ سراج الدین حقانی امریکا کو مطلوب افراد کی فہرست میں شامل ہیں ۔ عالمی میڈیا کے پاس بھی سراج الدین حقانی کی صرف ایک ہی تصویر موجود ہے جس میں انہوں نے اپنا چہرہ چادر سے چھپا رکھا ہے ۔