خواتین کیلیئے سٹیٹ بینک کا احسن اقدام

خواتین کیلیئے سٹیٹ بینک کا احسن اقدام

 

کراچی(نیاٹائم ویب ڈیسک) بینک اکاؤنٹ کھلوانے کےلئےکو ئی سرٹیفکیٹ نہیں، اکاؤنٹ گھر بیٹھے کھُلے گا۔ قرضے بھی ملیں گے، سٹیٹ بینک آف پاکستان نے گھریلو خواتین کےلئے اضافی سہولیات کا اعلان کردیاہے۔

ترجمان سٹیٹ بینک عابد قمر کےمطابق خواتین کو ذاتی بینک اکاؤنٹ کھلوانے میں سب سے بڑا مسئلہ درپیش ہوتا ہے کہ انکے پاس نوکری کا کوئی سرٹیفکیٹ یا آمدنی کی دستاویز ہونی چاہیے جو کہ ظاہر ہے گھریلو خواتین یا گھر پر ہی کوئی آن لائن کاروبار وغیرہ کرنے والی خواتین کے پاس نہیں ہوتا۔سٹیٹ بینک آف پاکستان نے بینکوں کو ہدایت کی ہے کہ وہ خواتین سے اب انکم سرٹیفکیٹ نہ مانگے بلکہ انکی جانب سے اپنی آمدن کا ذاتی بیان حلفی کافی ہو گا۔

سیکنڈ بڑی سہولت یہ دی جائے گی کہ سٹیٹ بینک اب خواتین کیلئے اکاؤنٹ کھولنے کے ساتھ ساتھ بینک سے قرضہ لینے کے عمل کو بھی مزید آسان بنائے گا۔اسٹیٹ بینک کے ترجمان نے بتایا کہ خواتین کو گھر بیٹھے اکاونٹ کھولنے کی سہولت بھی دی جا رہی ہےجبکہ بینکوں میں خواتین ملازمین کی سیٹیں بھی بڑھائی جائیں گی تاکہ خواتین اپنی بینکاری ضروریات کیلئے اگر خواتین بینکرز سے ہی بات کرنے میں آسانی محسوس کریں تو بھی انہیں کوئی مشکل نہ ہو۔اسٹیٹ بینک نے ملک میں مقیم پاکستانیوں کو ڈیجیٹل چینلز کے ذریعے بینک اکاؤنٹس کھولنے کی سہولت بھی مہیا کی ہے۔ اس فسیلٹی کے تحت بینکوں اور مائیکرو فنانس بینکوں (ایم ایف بیز) کی ویب سائٹس، پورٹلز، موبائل ایپلی کیشنز اور ڈیجیٹل کیاسک جیسے ڈیجیٹل چینلز کے ذریعے ملک میں رہائش پذیر پاکستانیوں کو بینک اکاؤنٹس کھولنے کی فسیلٹی ملے گی