• Wednesday, 20 October 2021
بلوچستان اسمبلی ، تحریک عدم اعتماد جمع

بلوچستان اسمبلی ، تحریک عدم اعتماد جمع

کوئٹہ ( نیا ٹائم ) وزیر اعلیٰ بلوچستان جام کمال کی پریشانیاں کم نہ ہو سکیں ، وزیر اعلیٰ بلوچستان ناراض ارکان کو نہ منا سکے ، بلوچستان عوامی پارٹی کے ناراض ارکان نے وزیر اعلیٰ جام کمال کے خلاف تحریک عدم اعتماد جمع کروا دی ۔ وزیر اعلیٰ بلوچستان جام کمال سے ناراض ارکان اسمبلی نے تحریک عدم اعتماد سیکرٹری صوبائی اسمبلی کے پاس جمع  کروائی ۔ تحریک عدم اعتماد جمع کروانے والے ناراض ارکان میں ظہور بلیدی ، سردار عبدالرحمٰن کھیتران ، نصیب اللہ مری اور دیگر شامل ہیں ۔ تحریک عدم اعتماد جمع کروانے کے بعد بلوچستان اسمبلی کے دیگر اراکین کے ہمراہ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ظہور بلیدی نے کہا کہ تحریک عدم اعتماد پر 14 ارکان اسمبلی نے دستخط کئے ہیں ۔ بلوچستان اسمبلی کے اکثریتی ممبرز جام کمال پر عدم اعتماد کا اظہار کرتے ہیں ، سپیکر بلوچستان اسمبلی جلد اسمبلی کا اجلاس طلب کریں ، جس میں تحریک اعتماد پیش کی جائے ، ظہور بلیدی نے مزید کہا کہ ہم وزیر اعلیٰ بلوچستان کو ایک بار پھر مہلت دیتے ہیں کہ وہ عہدے سے خود ہی استعفیٰ دے دیں ۔ رکن بلوچستان اسمبلی اسد بلوچ نے کہا کہ ایک فرد کے لیے پورے اجتماع کو قربان کر دیا جاتا ہے ۔ ہمیں ناراض ارکان کہا جاتا ہے ، ہم ناراض نہیں بلکہ متحد گروپ ہیں ، بلوچستان کے سیاسی بحران سے مزید مسائل پیدا ہوں گے ۔ وزیر اعلیٰ بلوچستان جام کمال بازی ہار چکے ہیں ، اب وہ استعفیٰ دے دیں تو بہتر ہے ۔ نصیب اللہ مری نے کہا کہ تحریک انصاف بلوچستان میں پہلے بھی اتحادی جماعت تھی اور اب بھی ہے ۔ واضح رہے بلوچستان میں عوامی نیشنل پارٹی نے موجودہ سیاسی بحران میں وزیر اعلیٰ بلوچستان جام کمال خان کے ساتھ کھڑے ہونے کا اعلان کرتے ہوئے ان کی پالیسیوں اور حکومت پر اعتماد کا اظہار کیا تھا ۔