اپوزیشن جماعتوں نے حکمت عملی بنا لی

اپوزیشن جماعتوں نے حکمت عملی بنا لی

اسلام آباد ( نیا ٹائم ) حکومت کی جانب سے قانون سازی کے لیے بلائے گئے مشترکہ اجلاس میں حکومت کے ساتھ کیسے نمٹنا ہے ، پارلیمنٹ میں اپوزیشن جماعتوں نے حکمت عملی تیار کر لی ۔ ذرائع کے مطابق قائد حزب اختلاف شہباز شریف کی سربراہی میں اسلام آباد کے پارلیمنٹ ہاؤس میں متحدہ اپوزیشن رہنماؤں کا اہم اجلاس طلب کیا گیا جس میں پاکستان پیپلز پارٹی کے سید خورشید شاہ ، سید یوسف رضا گیلانی ، جے یو آئی ف کے مولانا اسعد ، سابق وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی اور خواجہ آصف سمیت اپوزیشن کے اہم رہنماؤں نے شرکت کی ۔ متحدہ اپوزیشن کے ارکان نے اجلاس میں پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس کے حوالے سے حکمت عملی طے کرتے ہوئے عزم کا اظہار کیا کہ پارلیمنٹ میں وری قوت سے حکومت کی جانب سے کی جانے والی قانون سازی کی کوششوں کا راستہ روکیں گے ۔ اپوزیشن ارکان کے اجلاس میں اس بات پر اتفاق کیا گیا کہ پارلیمنٹ میں اپوزیشن جماعتیں اپنے اپنے ارکان کی حاضری 100 فیصد یقینی بنائی گی ۔ اجلاس میں قائد حزب اختلاف شہباز شریف نے کہا کہ ملک معاشی زوال اور عوام مہنگائی کے وبال میں میں مبتلا ہے ۔ اپوزیشن جماعتیں ظالم حکومت کو سیاہ قوانین پاس کروانے سے روکنے کے لیے پوری کوشش کریں گے ۔ حکوتی گرتی ہوئی دیوار ہے جسے اب ایک دھکا اور چاہئے ۔ گرتی دیوار کو سہارے بچا نہیں سکتے ۔

واضح رہے صدر مملکت عارف علوی نے مشترکہ پارلیمنٹ کا اجلاس کل بدھ کے روز بوقت 12 بجے طلب کیا ہے ۔ ذرائع کے مطابق اجلاس میں حکومت کی جانب سے الیکٹرانک ووٹنگ مشین بل سمیت دیگر بلز پیش کئے جانے کا امکان ہے ۔ اس سے قبل پارلیمنٹ کا مشترکہ اجلاس 11 نومبر کو طلب کیا گیا تھا تاہم بعد میں اس اجلاس کو موخر کر دیا گیا تھا ۔