افغانستان سے امریکی انخلاء احمقانہ فیصلہ تھا ، ٹونی بلیئر

افغانستان سے امریکی انخلاء احمقانہ فیصلہ تھا ، ٹونی بلیئر

لندن ( نیا ٹائم ویب ڈیسک ) سابق برطانوی وزیر اعظم ٹونی بلیئر نے افغانستان سے فوجی انخلاء کے امریکی فیصلے پر شدید تنقید کرتے ہوئے کہا کہ افغانستان سے امریکی فوج کا انخلاء انتہائی بری حکمت عملی تھی ۔ ٹونی بلیئر نے اپنے ایک آرٹیکل میں لکھا کہ امریکی انخلاء نے پوری دنیا کے شدت پسندوں کو خوش کیا ہے ۔ افغانستان میں طالبان کو قبضے کا موقع امریکی انخلاء سے ملا ۔ 68 سالہ سابق وزیر اعظم ٹونی بلیئر نے اپنے آرٹیکل میں شکوہ کرتے ہوئے لکھا کہ جنگی حلیف ہونے کے باوجود امریکا نے انخلا اور طالبان سے معاہدے کے معاملے پر برطانیہ کو اندھیرے میں رکھا جس سےعالمی اتحاد کو نقصان پہنچے گا ۔ اتحادی ممالک دو حصوں میں تقسیم ہو سکتے ہیں ۔  ٹونی بلیئر نے جو بائیڈن کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے مزید لکھا کہ امریکی حکمران جنگوں کو ختم کرنے کے پُر فریب سیاسی نعرے پر عمل پیرا ہیں ۔ امریکی فوجیوں نے افغانستان سے انخلاء کے بعد مقامی شہریوں کو بے یارو مددگار چھوڑ دیا ۔ واضح رہے ٹونی بلیئر 1997ء سے 2007 تک برطانیہ کے وزیر اعظم رہے اور نائن الیون کے بعد انہوں نے افغانستان میں برطانوی فوج بھجوانے کی منظوری دی تھی ۔