• Wednesday, 20 October 2021
آریان خان کے لیے امید کی کرن

آریان خان کے لیے امید کی کرن

ممبئی ( نیا ٹائم ویب ڈیسک ) بالی ووڈ کے کنگ شاہ رخ خان کے بیٹے آریان خان کو اگرچہ منشیات کیس میں ضمانت نہ مل سکی تاہم نار کوٹکس کنٹرول بیورو کے عدالت میں آریان خان سے منشیات برآمدگی نہ ہونے کے اعتراف نے آریان خان اور شاہ رخ خان کے لیے امید کی کرن روشن ہو گئی ہے ۔ بھارتی میڈیا کے مطابق آریان خان سمیت دیگر ملزموں کی ضمانت کی درخواستوں پر سپیشل کورٹ میں سماعت ہوئی جس میں این سی بی نے عدالت میں جواب جمع کروایا کہ آریان خان سے کوئی برآمدگی نہیں ہوئی ، تاہم آریان کو دیگر ملزموں سے الگ نہیں کیا جا سکتا ۔ آریان سے منشیات برآمد نہ ہونے کے باوجود وہ اس معاملے میں پوری طرح ملوث ہیں اور انہیں ضمانت نہیں دی جا سکتی ۔ این سی بی نے عدالت کو بتایا کہ آریان کو ضمانت نہ دی جائے چونکہ وہ بااثر شخصیت ہیں جس سے خدشہ ہے کہ وہ ثبوتوں کو مٹا سکتے ہیں اور کیس کے شواہد کے ساتھ چھیڑ چھاڑ کر سکتے ہیں ۔ این سی بی نے کہا کہ یہ بھی واضح ہے کہ اچت کمار اور شیوراج نے آریان اور ارباز کو چرس سپلائی کی ، یہ سب ملزمان ایک دوسرے کے ساتھ جڑے ہوئے ہیں ، جس وجہ سے ان کو الگ نہیں کیا جا سکتا ۔ نار کوٹکس ایجنسی نے عدالت میں آریان پر یہ بھی الزام لگایا کہ وہ انٹرنیشنل ڈرگ ڈیلرز سے رابطوں میں تھے ۔ دوسری جانب آریان خان کے وکیل امیت دیسائی نے بھی دلائل دئیے جس کے بعد عدالت نے کیس کی سماعت کل 12 بجے دن تک ملتوی کر دی ۔ جس کے بعد آریان آج رات بھی سرکاری مہمان رہیں گے اور انہیں آج رات بھی ممبئی کی جیل میں ہی بسر کرنا پڑے گی ۔ واضح رہے 2 اکتوبر کی رات نار کوٹکس بیورو نے ممبئی کے ساحل پر ایک کروز شپ پر ہونے والی پارٹی میں چھاپہ مارا تھا جہاں سے بالی ووڈ کے مشہور شاہ رخ خان کے بیٹے آریان خان سمیت 8 افراد کو منشیات استعمال کرنے کے الزام اور منشیات فروشوں کے ساتھ تعلق رکھنے کے الزام میں گرفتار کیا تھا ۔